.

اسرائیلی فائر بندی ختم، بمباری کا سلسلہ دوبارہ شروع

غزہ کے علاقے خان یونس میں تین فلسطینی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی جارحیت کا شکار غزہ کی پٹی سے تعلق رکھنے والے فلسطینی مزاحمت کاروں نے عارضی جنگ بندی کو مسترد کرتے ہوئے اسرائيل پر تازہ راکٹ حملے کيے، جس کے بعد اسرائيلی فوج نے بھی غزہ ميں اپنی کارروائی دوبارہ شروع کر دی ہے۔ غزہ سٹی اور خان یونس کے علاقوں میں بمباری سے تین فلسطینی شہید ہو گئے۔

اسرائيلی فوج کی طرف سے آج [بروز اتوار] جاری کردہ ايک بيان ميں کہا گيا ہے کہ غزہ کے شہريوں کی فلاح کے ليے انسانی بنيادوں پر فائر بندی کے دورانيے ميں حماس کی طرف سے مسلسل راکٹ حملوں کے جواب ميں اسرائيلی دفاعی فورسز اب اپنی فضائی، بحری اور زمينی کارروائی بحال کر ديں گی۔ فوجی بيان ميں شہريوں کو تنبيہ کی گئی ہے کہ وہ تصادم کی زد ميں آنے والے علاقوں سے دور رہيں۔

درايں اثناء غزہ پٹی حماس کے ملڑی ونگ القسام بريگيڈ نے بتايا ہے کہ اس نے اسرائيل کے جنوبی شہر اشدود پر پانچ گراڈ ميزائل داغے جبکہ تل ابيب کی طرف بھی ايک M75 راکٹ فائر کيا گيا۔ ايک اور اسلامی جہادی تحريک کے مسلح ونگ سرایا القدس نے بھی اسرائيل کی طرف راکٹ حملے کرنے کا دعوی کيا ہے۔

اتوار کی صبح اسرائیل جنوبی و وسطی شہروں ميں انتباہی سائرنوں کی آوازيں گونجتی رہيں تاہم عينی شاہدين کے بقول کوئی شہری زخمی يا ہلاک نہيں ہوا۔ اسرائيلی دفاعی نظام آئرن ڈوم نے دو راکٹوں کو مار گرايا جبکہ ديگر تمام غیر گنجان آباد علاقوں ميں گرے۔