غزہ میں اونرا کے سکول پر بمباری، 15 بچے شہید

بے خانماں فلسطینیوں نے سکول میں پناہ لے رکھی تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

غزہ کی پٹی میں نہتے فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی درندگی کا سلسلہ عید کے تیسرے روز بھی جاری رہا۔ بدھ کو علی الصباح اسرائیل نے حیوانیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی 'انروا' کے ایک اسکول پر بمباری کی جس کے نتیجے میں کم سے کم 15 بچے شہید اور درجنوں افراد زخمی ہو گئے۔ زخمیوں میں بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی بتائی جاتی ہے۔

غزہ میں سیکیورٹی اور میڈیکل ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج نے شمالی غزہ میں جبالیا کے مقام پر انروا کے تحت قائم ایک اسکول پر بمباری کی جہاں سیکڑوں بے خانماں افراد وہاں پناہ لیے ہوئے تھے۔ بمباری سے اسکول کی عمارت ملبے کا ڈھیر بن گئی اور درجنوں افراد اس کے نیچے دب گئے۔

میڈیکل ذرائع کے مطابق اسکول پر بمباری سے شہید ہونے والے 15 بچوں کی خون آلودہ لاشوں اور 50 زخمیوں کو کمال عدوان اسپتال منتقتل کر دیا گیا۔

اسرائیلی فوج کے ہاتھوں دو دنوں کے اندر فلسطینیوں کے قتل عام کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ گذشتہ روز بھی اسی علاقے میں اسرائیلی فوج کی وحشیانہ بمباری میں ایک ہی خاندان کے 18 افراد شہید ہو گئے تھے۔ آٹھ جولائی سے غزہ کی پٹی پر مسلط جنگ میں اب تک 1220 شہری شہید اور ساڑھے چھ ہزار زخمی ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں