.

یہودی بستی پر میزائل گرنے کی جھوٹی اسرائیلی وارننگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے کہا ہے نئی فائر بندی کے دوران جمعرات کے روز حماس نے کوئی میزائل نہیں داغا۔ ترجمان نے واضح کیا کہ اسرائیلی پولیس کی جانب سے غزہ کی سرحد کے قریب واقع اشکول نامی یہودی بستی پر میزائل کرنے کی وارننگ جھوٹی تھی۔

ادھر اسلامی تحریک مزاحمت [حماس] کے ایک سینئر رکن عزت الرشق نے دو ٹوک الفاظ میں اس بات کی تردید کی ہے کہ فلسطینیوں نے فائر بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اسرائیل پر کوئی میزائل داغا ہے۔ انہوں نے فائر بندی کے باوجود اسرائیلی فضائی حملوں کو جنگ بندی کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

یاد رہے گذشتہ رات اسرائیلی فوج نے الزام عاید کیا تھا کہ غزہ میں فلسطینی جنگجووں نے فائر بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اسرائیل پر آٹھ میزائل فائر کئے اور بتایا کہ اسرائیل نے دراصل انہی جگہوں کو نشانہ بنایا جہاں سے یہ میزائل مبینہ طور پر فائر کئے گئے۔

ان کارروائیوں میں دونوں اطراف میں کسی نقصان کی اطلاع نہیں ملی اور جمعرات کو علی الصباح لڑائی بند ہو گئی۔