S-300 روسی میزائل شام کے بجائے مصر کو دیے جائیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روس کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ایتار تاس نے ملٹری انڈسٹریل کمپلیکس ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ شام کے لیے تیارکردہ میزائل ایس 300 بی ایم او (فافوریٹ) کو دمشق کے بجائے مصر کو فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

روسی سیکیورٹی ذرائع نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ مصری حکومت کی جانب سے روس سے "ایس 300" میزائلوں کی خریداری میں دلچسپی ظاہر کی گئی تھی جس کے بعد شام کے بجائے یہ میزائل قاہرہ کو فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ چونکہ یہ میزائل اور ایئر ڈیفنس سسٹم شام کے لیے خصوصی طور یر تیار کیے گئے تھے۔ اب انہیں مصر کو فراہم کیا جا رہا ہے۔ اس لیے ان میں کچھ ضروری تکنیکی تبدیلیاں بھی کرنا ہوں گی۔ تبدیلی کے عمل سے گذارنے کے بعد میزائل مصر کےحوالے کر دیے جائیں گے۔

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ مصر نے حال ہی میں روس سے 400 ملین ڈالر مالیت کا گولہ وبارود، اسپیئر پارٹس اور دیگر جنگی آلات کی ایک ڈیل کی ہے۔ مصر کی مسلح افواج کے لیے یہ کوئی نیا معاہدہ نہیں بلکہ سابق سوویت یونین کے دور کا اسلحہ اور گولہ بارود بھی مصری فوج آج تک استعمال کرتی آ رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں