پارٹی کی محبت میں کلمہ طیبہ کی افسوسناک توہین

پرچم لہرانے میں سبقت کے دوران داعش، النصرہ کلمہ طیبہ کی بے حرمتی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسلام کی سخت گیر تشریح کرتے ہوئے بزعم خود مذہب کے ٹھیکیدار بننے والے شدت پسند گروپ بالادستی کے لیے نہ صرف لوگوں کا قتل عام کر رہے ہیں بلکہ اس جنگ میں انہیں کلمہ طیبہ کی حرمت کا بھی کوئی خیال نہیں۔ وہ ایک دوسرے کے کلمہ طیبہ والے پرچم اتار کر پائوں میں پھینک دیتے ہیں اور اپنے پرچم لہرا کر خود کو فتح مند ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌ کے مطابق شام اور عراق کے مختلف علاقوں‌ پر قابض تنظیم" داعش" اور القاعدہ کی ذیلی شاخ النصرہ فرنٹ کے درمیان ایک دوسرے کے پرچم اتار کر پھینکنے اور اپنے پرچم لہرانے کا بھی ایک دلچسپ مقابلہ جاری ہے۔ دونوں تنظیموں کے سیاہ پرچموں پر کلمہ طیبہ"لا الہ الا اللہ محمد رسول اللہ" درج ہے، لیکن جس تنظیم کو موقع ملتا ہے وہ دوسرے کا پرچم اتار اسے زمین پر پھینک دیتی ہے اور اپنا پرچم لہرا دیا جاتا ہے۔

داعش اور النصرہ فرنٹ کے درمیان پرچم لہرانے کی مقابلہ بازی پر سوشل میڈیا پر بھی بھرپور تبصرے ہو رہےہیں۔ حال ہی میں ایک ویڈیو فوٹیج بھی سامنے آئی ہے جس میں النصرہ کے 'الجولانی' پرچم کو اتار کر اس کی جگہ 'البغدادی' پرچم لہرا رہے ہیں۔ اس موقع پر موجود جنگجو مسلسل نعرہ تکبیر اللہ اکبر کی صدائیں بھی بلند کر رہے ہیں۔ یوں لگ رہا ہے جیسے وہ کوئی بہت بڑا معرکہ سر کر رہے ہیں۔ یہ تماشا شام کے مختلف شہروں میں اکثر دیکھنے کو ملتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں