.

داعش نے اپنے 18 کرد جنگجو موت کے گھاٹ اتار دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں ‌موجود شدت پسند تنظیم دولت اسلامی عراق وشام"داعش" نے کرد قبیلے سے تعلق رکھنے والے اپنے 18 جنگجوؤں کو عدم اعتماد کی بناء پر قتل کر دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراق کے نیم خود مختارصوبہ کردستان کی وزارت مذہبی امور کے ترجمان مریوان النقشبدی نے ایک انٹرویو میں‌ بتایا کہ رواں سال داعش کے ورغلانے اور اکسانے پر کردستان کے 100 شہری بھی شدت پسند تنظیم میں شامل ہوئے ہیں۔ حال ہی میں تنظیم نے ان میں سے اٹھارہ کو شک کی بناء پر موت کے گھاٹ اتار دیا۔

خیال رہے کہ داعش کی جانب سے اپنے کرد عناصر کو قتل کرنے کا یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب عراق میں کردستان کی البشمرکہ فورس، عراقی فوج اور امریکا شدت پسندوں ‌کے خلاف مشترکہ آپریشن جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اس آپریشن کے نتیجے میں ‌دو ماہ قبل داعش نے کردستان کے جن علاقوں پر قبضہ کیا تھا ان میں سے بیشتر کو چھڑا لیا گیا ہے۔

کردستان مذہبی امور کے ترجمان نے بتایا کہ داعش میں شامل ہونے والے ایک سو عناصر میں سے تیرہ جنگ کے دوران مارے گئے تھے۔ تنظیم کو کرد ساتھیوں پر مخبری کا شبہ ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پرسوں جمعہ کے روز اٹھارہ کرد جنگجوؤں کو گولیاں مار کر ہلاک کر دیا گیا۔