.

عرب لیگ کا نئی عراقی حکومت کی حمایت پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب لیگ کے سیکریٹری جنرل نبیل العربی نے عراق میں دولت اسلامی (داعش) کے جنگجوؤں کو شکست دینے کے لیے عالمی برادری پر زوردیا ہے کہ وہ وزیراعظم حیدر العبادی کی نئی حکومت کی حمایت کرے۔

عراقی پارلیمان نے سوموار وزیراعظم حیدر العبادی کی نئی کابینہ کی منظوری دی ہے۔نبیل العربی نے منگل کو ایک بیان میں بغداد میں اس نئی حکومت اور اس کی داعش کے خلاف جنگ میں حمایت کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے اس نازک مرحلے پر عراق کو تقویت پہنچانے کے لیے علاقائی اور بین الاقوامی کوششوں کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

عرب لیگ کے وزرائے خارجہ نے اتوار کو قاہرہ میں اپنے اجلاس میں داعش کے جنگجوؤں سے نمٹنے کے لیے ضروری اقدامات اور بین الاقوامی کوششوں میں شریک ہونے سے اتفاق کیا تھا۔تاہم عرب لیگ نے واضح طور پر داعش کے جنگجوؤں کےخلاف امریکا کے فضائی حملوں کی حمایت کا اظہار نہیں کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ جان کیری داعش کے خلاف جنگ میں وسیع تر حمایت کے حصول کے لیے خطے کے ملکوں کے دورے پر ہیں۔توقع ہے کہ وہ آیندہ جمعرات کو سعودی عرب میں عرب لیگ کے وزرائے خارجہ سے ملاقات کریں گے اور ان سے داعش کے خلاف امریکا کے مجوزہ بین الاقوامی اتحاد کے حوالے سے تبادلہ خیال کریں گے۔

عراق کے وزیراعظم ڈاکٹر حیدر العبادی کی کابینہ نے پارلیمان کی منظوری کے بعد اقتدار سنبھال لیا ہے۔امریکا کا کہنا ہے کہ یہ وسیع البنیاد قومی حکومت عراق کو تقسیم ہونے سے بچا سکتی ہے اور اس میں اہل سُنت کی نمائندگی سے ان کی جانب سے داعش کے جنگجوؤں کی حمایت میں بھی کمی واقع ہوگی کیونکہ وہ سابق وزیراعظم نوری المالکی کی فرقہ وارانہ پالیسیوں کی وجہ سے داعش ایسے سخت گیر جنگجو گروپوں کی حمایت پر مجبور ہو گئے تھے۔