عراقی وزیراعظم کی ٹیلیفون فون پر بان کی مون بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کے نو منتخب وزیر اعظم ڈاکٹر حیدر العبادی نے ایک بار پھر عالمی برادری سے دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں تعاون کی اپیل کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ عالمی برادری کے دست تعاون سے ہی عراق کو دہشت گردی سے بچایا سکتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے عراقی وزیر اعظم حیدر العبادی کو ٹیلیفون کیا۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان خطے کی موجودہ صورت حال بالخصوص عراق میں امن و امان کے قیام کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

عراقی وزیر اعظم ہاؤس کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ 'یو این' سیکرٹری جنرل بان کی مون نے وزیر اعظم العبادی کو نئی حکومت تشکیل دینے پر مبارک باد پیش کی اور اپنے جانب سے عراق میں سیاسی استحکام اور امن و امان کے قیام میں ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ ٹیلیفون پر بات چیت کرتے ہوئے عراق وزیر اعظم نے کہا کہ دہشت گردی کی لعنت سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لیے بغداد کو عالمی برادری کے تعاون کی اشد ضرورت ہے۔

حیدر العبادی نے عراق اور مشرق وسطیٰ میں دیر پاقیام امن کے حوالے سے اقوام متحدہ کے کردار کی اہمیت کا اعتراف کیا اور کہا ہے عراقی حکومت عالمی برادری اور دوست ممالک مل کر دہشت گرد گروپوں کو شکست سے دوچار کر سکتی ہے۔ دوسری جانب بان کی مون نے وزیر اعظم العبادی کو یقین دلایا کہ عراق میں دیرپا قیام امن کے لیے ہر سطح پر کوششیں جاری رکھی جائیں گی۔

انہوں‌ نے کہا کہ اس وقت عالمی برادری کی اولین ترجیح عراق اور شام میں تیزی سے پھیلنے والی تنظیم دولت اسلامیہ "داعش" کی راہ روکنا ہے۔ اس حوالے سے جلد ہی سلامتی کونسل میں عالمی اتحاد کے لیے قرارداد بھی پیش کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں