مصری فورسز کی کارروائی،سیناء میں 7 جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں پولیس اور فوج کی ایک مشترکہ کارروائی میں سات جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

مصری وزیرداخلہ محمد ابراہیم نے اتوار کو قاہرہ میں ایک نیوز کانفرنس میں بتایا ہے کہ جھڑپ میں ہلاک ہونے والے ساتوں جنگجو انصار بیت المقدس کے خطرناک عناصر میں سے تھے۔انھوں نے جولائی میں لیبیا کی سرحد کے ساتھ واقع ایک چوکی پر حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں بائیس فوجی مارے گئے تھے۔

تاہم مصری وزیرداخلہ نے یہ نہیں بتایا ہے کہ ان جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کب کی گئی ہے۔واضح رہے کہ انصار بیت المقدس اور دوسرے جنگجو گروپ 3 جولائی 2013ء کو مصر کے پہلے منتخب صدر محمد مرسی کی برطرفی کے بعد سے سکیورٹی فورسز پر حملے کررہے ہیں۔ان حملوں میں بیسیوں فوجی اور پولیس اہلکار مارے جاچکے ہیں۔

انصار بیت المقدس کا کہنا ہے کہ وہ مرسی نواز مظاہرین کے خلاف فوج اور پولیس کے کریک ڈاؤن کے ردعمل میں یہ حملے کررہی ہے۔مصری سکیورٹی فورسز کے قاہرہ اور دوسرے شہروں میں اخوان المسلمون کے حامیوں کے خلاف کریک ڈاؤن میں کم سے کم دو ہزار افراد مارے گئے تھے اور ہزاروں کو گرفتار کرکے پابند سلاسل کردیا گیا ہے۔اخوان کے مرشدعام اور دیگر اعلیٰ عہدے داروں سمیت سیکڑوں کارکنان کو موت اور قید کی سزائیں سنائی جاچکی ہیں۔

مصری سکیورٹی فورسز غزہ کی پٹی اور اسرائیل کی سرحد کے ساتھ واقع جزیرہ نما شمالی سیناء میں القاعدہ سے متاثر انصار بیت المقدس اور دوسرے جنگجو گروپ کے خلاف گذشتہ مہینوں سے ایک بڑی کارروائی کررہی ہیں لیکن ابھی تک وہ ان جنگجو گروپوں کا مکمل قلع قمع کرنے میں کامیاب نہیں ہوئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں