.

بغداد کے قریب بھی داعش پر امریکی بمباری

عراقی دارالحکومت کے قریب پہلی مرتبہ فضائی کارروائی کی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے عراق میں داعش کے خلاف جاری اپنے فضائی حملوں کے سلسلے میں پہلی بار بغداد سے متصل علاقوں میں کارروائی کی ہے اور داعش کے ٹھکانوں کو بمباری کا نشانہ بنایا ہے۔

اس بارے میں فوجی حکام کا کہنا ہے '' امریکی جنگی طیاروں نے پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بغداد اور سنجار کے نزدیک دو الگ الگ مقامات پر کارروائی کی ہے۔

واضح رہے امریکا ماہ اگست سے عراق میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کر رہا ہے۔ یہ حملے پہلے موصل اور اس کے آس پاس کیے جاتے رہے ہیں۔ اب عراق کی سکیورٹی فورسز کی مدد کے لیے ان حملوں کے دائرے میں وسعت لائی جا رہی ہے۔

امریکی حکام نے کہا '' بغداد کے جنوب مغرب پہلی مرتبہ کارروائی کی گئی ہے، اس کارروائی کا تعلق صدر اوباما کی طرف سے پیش کردہ داعش مخالف حکمت عملی کے نئے خاکے سے ہے۔

بتایا گیا ہے کہ اس حملے کے دوران سنجار کے قریب داعش کی چھ گاڑیاں تباہ کی گئی ہیں۔ نیز جنوب مغرب میں داعش کے ان ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے جو عراقی فورسز پر فائرنگ کا ذریعہ بنے ہوئے تھے۔

اس اپنی نوعیت کی پہلی کارروائی کے بعد امریکی جنگی طیارے بحفاظت اپنے ٹھکانوں پر واپس پہنچ گئے ہیں۔ عراق میں امریکی فضائیہ اب تک 162 ائیر سٹرائیکس کر چکی ہے۔

امریکی سی آئی اے کے مطابق داعش کے عراق اور شام میں لڑنے والے جنگجووں کی تعداد مجموعی طور پر 31500 ہے۔ جو آئندہ دنوں امریکا اور اتحادیوں کے نشانے پر ہوں گے۔