دو دن میں داعش کا شامی کردستان کے 60 دیہات پر قبضہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شدت پسند تنظیم دولت اسلامی عراق و شام "داعش" کے جنگجوؤں نے گذشتہ 48 گھنٹے کے دوران شمالی شام کے کرد اکثریتی علاقوں پر حملے کرکے کم سے کم 60 کرد دیہاتوں پر قبضہ کر لیا ہے۔

شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والی آبزرویٹری کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ داعش کے جنگجوؤں نے جمعہ کے روز کرد اکثریتی علاقے"کوبانی" کے عین العرب سمیت کم سے کم مزید چالیس دیہات پر قبضہ کر لیا ہے۔

آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان نے خبر رساں ادارے "اے ایف پی" کو بتایا کہ پچھلے اڑتالیس گھنٹوں کے دوران داعش کے جنگجوؤں نے کرد اکثریتی آبادی کے 60 دیہات پر قبضہ کیا ہے۔ ان میں سے 40 قصبوں پر کل جمعہ کے روز قبضہ کیا گیا۔ عبدالرحمان نے بتایا کہ داعش کے کنڑول میں آنے والے کرد علاقوں میں کم سے کم 800 افراد کی زندگیاں خطرے میں ہیں۔

خیال رہے کہ جمعہ کے روز داعش کی کارروائی کے بعد ترکی نے شام سے متصل اپنی حدود کرد شہریوں کے لیے کھول دی تھیں جس کے بعد بڑی تعداد میں کرد شہری ترکی بھی داخل ہونا شروع ہو گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں