.

داعش اور عراق دونوں جنگی جرائم کے مرتکب ہیں: یو این

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ نے اپنی ایک رپورٹ میں دولت اسلامی"داعش" کے ہاتھوں معصوم شہریوں کے قتل عام اور سفاکیت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے تنظیم کو سنگین جنگی جرائم کی مرتکب قرار دیا ہے۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کی جانب سے عراق اور شام میں داعش کے زیرقبضہ علاقوں میں خواتین کی سر عام نیلامی، مذہب اور عقیدے کی بنیاد پر مخالفین کے وحشیانہ قتل عام، صحافیوں اور انسانی حقوق کے کارکنوں کے سرقلم کرنے کو سنگین جرم قرار دیا گیا ہے۔

رپورٹ میں عراق میں سرکاری فوج کی جانب سے جنگجوؤں کی جانب سے کی گئی کارروائیوں میں شہریوں کو نشانہ بنانے کی بھی مذمت کی گئی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عراقی فوج نے دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کے نام پر اسپتالوں، اسکولوں اور عام شہری بستیوں پر 500 فضائی اور زمینی حملے کیے ہیں جن میں بڑی تعداد میں عام شہید مارے گئے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عراق میں سرگرم عسکری گروپوں اور عراق فورسز دونوں انسانی حقوق کی پامالیوں میں ملوث ہیں۔