.

کوبانی پر قبضے کے لیے داعش کی نئی یلغار

تین کرد ہلاک ، اتحادیوں کی پھر بمباری، ہر طرف سیاہ دھواں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں سرحدی قصبے کوبانی پر قبضے کے لیے کوشاں داعش کے عسکریت پسندوں نے کوبانی پر یلغار کے لیے نئی حکمت عملی اختیار کرتے ہوئے بعض اطراف سے خود کو پیچھے ہٹا لیا ہے۔

لندن میں قائم آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان کے مطابق کوبانی جس کا عربی نام عین العرب ہے، کہ مشرقی حصے میں پھر سے آتشیں لڑائی جاری ہے اور داعش اپنی کھوئی ہوئی پوزیشن واپس لینے کی کوشش کر رہی ہے۔

اس علاقے میں داعش کی پیش قدمی کو امریکا اور اتحادیوں کی بمباری نے روک دیا تھا۔ رامی عبدالرحمان کے مطابق اس نئی لڑائی کے دوران کم از تین کرد عسکریت پسند ہلاک ہو گئے ہیں۔ البتہ داعش کے ہلاک ہونے والے انتہا پسندوں کی تعداد سامنے نہیں آئی ہے۔

آبزرویٹری کے مطابق یہ پیش قدمی داعش کی راتوں رات ہونے والی کوبانی کے مختلف اطرف سے ہونے والی پس قدمی کے بعد ہوئی ہے۔

اس وقت قصبے کے مشرقی کنارے کے پاس داعش کے انتہا پسند لڑ رہے ہیں تاہم قصبے کی مغربی جانب سے پیچھے ہٹ چکے ہیں۔ اس سے پہلے داعش کو جانی نقصان کے علاوہ چار جنگی وہیکلز کا نقصان بھی برداشت کرنا پڑا تھا۔

داعش کی اس نئی حکمت عملی کے سامنے آنے کے بعد بدھ کے روز ایک اتحادی طیارے نے داعش کے انتہا پسندوں پر بمباری کی ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق بمباری سے سیاہ دھویں نے پورے منظر کو چھپا دیا۔