.

احمد طعمہ دوبارہ شام کے جلا وطن وزیراعظم منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی حزب اختلاف کے قومی اتحاد نے ڈاکٹر احمد طعمہ کو دوبارہ اپنی جلاوطن حکومت کا وزیراعظم منتخب کر لیا ہے۔

ترکی کے شہر استنبول میں منعقدہ اجلاس میں منگل کی رات ان کا انتخاب عمل میں لایا گیا ہے اور ان کے حق میں قومی اتحاد کے پینسٹھ میں سے تریسٹھ ارکان نے ووٹ دیا ہے۔انھیں جولائی میں صرف دس ماہ کے بعد جلاوطن حکومت کی وزارت عظمیٰ کے عہدے سے برطرف کردیا گیا تھا۔

شامی حزب اختلاف کے قومی اتحاد کا اجلاس پانچ روز جاری رہا ہے اور اس میں وزارت عظمیٰ کے لیے کسی اور نام پر اتفاق رائے نہیں ہوسکا تھا۔اتحاد کے ایک رکن نے سوموار کو فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ''شرکاء مِیں سخت تناؤ پایا جارہا ہے اور ان کے درمیان شاید نئے وزیراعظم کے نام پر اتفاق نہ ہوسکے''۔

ڈاکٹر احمد طعمہ شامی حزب اختلاف کے ایک بڑے دھڑے اخوان المسلمون کے قریب سمجھے جاتے ہیں۔وہ دس ماہ تک اتحاد کی قیادت کرتے رہے تھے۔واضح رہے کہ برطانیہ اور امریکا سمیت بہت سے ممالک شامی قومی اتحاد ہی کو شامی عوام کے قانونی اور جائزہ نمائندہ ادارے کے طور پرتسلیم کرتے ہیں۔

تاہم خانہ جنگی کا شکار ملک میں شامی صدر بشارالاسد کی فورسز اور حکومت کی چیرہ دستیوں کا مقابلہ کرنے والے شہری اس کو غیرمؤثر ہونے کی بنا پر تنقید کا نشانہ بناتے رہتے ہیں۔ان کا سب سے بڑا الزام یہ ہے کہ اس اتحاد کا برسرزمین موجود باغی جنگجوؤں سے کوئی رابطہ نہیں ہے اور وہ اس کی جلاوطن قیادت ان سے کٹی ہوئی ہے۔وہ اس پر بدعنوان ہونے کے الزامات بھی عاید کرتے رہتے ہیں۔