سعودی عرب نے ’وصال‘ ٹی وی کی نشریات بند کر دیں

پابندی کا حکم وزیر ثقافت اور اطلاعات نے صادر کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی حکومت نے گذشتہ روز الاحساء شہر میں پیش آنے والے بدامنی کے واقعات کے بعد ریاض میں ’’وصال‘‘ ٹیلی ویژن چینل کی نشریات بند کر دی ہیں۔

عرب روزنامہ ’’عکاظ‘‘ کے مطابق سعودی وزیر برائے ثقافت و اطلاعات ڈاکٹر عبدالعزیز بن محی الدین خوجہ نے ٹیوٹر پر ایک مختصر بیان میں کہا کہ "ملک میں امن وامان کو خراب کرنے اور فنتہ انگیزی کے مرتکب پر قسم کے اشاعتی اور نشریاتی ادارے کو بند کر دیا جائے گا۔"

انہوں نے بتایا کہ منگل کے روز الاحساء شہر میں دہشت گردی کے واقعے کے بعد ’وصال‘ ٹی وی کے ریاض میں قائم دفتر کو بند کر دیا گیا ہے۔ ڈاکٹر عبدالعزیز خوجہ نے الاحساء شہر میں دہشت گردی کی مذمت کرتے ہوئے فائرنگ کے نتیجے میں پانچ شہریوں کی اموات پرگہرے دکھ کا اظہار کیا۔

ڈاکٹر خوجہ نے کہا کہ دہشت گردوں کا کوئی دین ومذہب نہیں۔ یہ سب انسانوں کے یکساں دُشمن ہیں۔ سعودی عرب کی سر زمین میں بیرونی ہاتھوں کے ذریعے کی جانے والی دہشت گردی کوئی نئی بات نہیں ہے۔ دہپشت گرد اپنے مذموم عزائم کی تکمیل کے لیے سعودی عرب کے امن واستحکام کو دائو پر لگانا چاہتے ہیں لیکن مملکت کے عوام اور قانون نافذ کرنے والے ادارے دشمن کے ارادوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

خیال رہے کہ کل منگل کو سعودی عرب کے الاحساء شہر میں نامعلوم مسلح نقاب پوشوں کی فائرنگ کے نتیجے میں کم سے کم پانچ افراد مارے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں