.

اسرائیلی پولیس نے بائیس سالہ فلسطینی کو شہید کر دیا

فلسطینی کے احتجاج کے بعد، پولیس نے گاوں کا محاصرہ کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی پولیس نے ہفتے کے روز ایک فلسطینی نوجوان کو علی الصبح گولی مار کر شہید کر دیا ہے۔ فلسطینی نوجوان کی شہادت کا یہ واقعہ ایک اور فلسطینی کی گرفتاری کے نام پر مارے گئے چھاپے کے دوران پیش آیا ہے۔

اسرائیلی فوج اور پولیس کی طرف سے فلسطینیوں کے خلاف کئی ہفتوں سے جاری کارروائیوں کے سلسلے میں یہ کارروائی کافر کانا کے علاقے میں کی گئی ہے۔

یہ علاقہ مشرقی یروشلم سے جڑا ہوا ہے۔ یروشلم میں آج کل تقریبا ہر روز اسرائیلی فوج اور پولیس فلسطینی عوام کو نشانہ بنا رہی ہے۔

بائیس سالہ فلسطینی نوجوان کو اس وقت شہید کیا گیا جب اس کے ایک رشتہ دار کو گرفتار کرنے کے نام پر پولیس نے اس کے گھر کو بھی گھیرے میں لے لیا۔

پولیس نے الزام لگایا ہے کہ اس موقع پر ایک افسر کو چاقو مارنے کی دھمکی دی گئی۔ بعد ازاں اس نوجوان کو گولی مار شہید کر دیا گیا۔

اس اندوہناک واقعے کے بعد فلسطینیوں نے ٹائروں کو آگ لگا کر احتجاج کیا۔ پولیس اور دیگر اسرائیلی فورسز نے احتجاجی مظاہرین کو طاقت سے منتشر کر کے علاقے میں نفری بڑھا کر پورے گاوں کو گھیرے میں لے رکھا ہے۔