.

’داعش نے پانچ ماہ ميں 1500 افراد کو قتل کردیا‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں سرگرم دہشت گرد گروپ دولت اسلامی 'داعش' نے داخلی شورش کے شکار اس ملک میں گذشتہ پانچ مہینوں کے دوران پندرہ سو افراد ہلاک کردیے ہیں۔

انسانی حقوق کی شامی آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ اُن کے ادارے نے رواں سال جون سے لے کر اب تک مجموعی طور پر 1,429 افراد کی ہلاکت کا ريکارڈ رکھا ہے۔ اِن ميں سے 879 شہری تھے جبکہ 700 کے قريب افراد کا تعلق الشعيطات نامی سنی مسلک کے پیروکار مقامی قبيلے سے تھا۔

یاد رہے الشعيطات قبيلے کے ارکان ملک کے مشرقی حصے ميں داعش کے خلاف اُٹھ کھڑے ہوئے تھے۔ ہلاک شدگان ميں سے تريسٹھ کا تعلق الُنصرہ فرنٹ نامی ايک اور مخالف شدت پسند تنظيم سے تھا۔