مقبوضہ یروشلم: یہودی عبادت گاہ میں چار یہودی ہلاک

حملہ آوروں کو گولی مار دی گئی ہے: ترجمان اسرائیلی پولیس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مقبوضہ یروشلم میں منگل کی صبح ایک حملے کے دوران پانچ اسرائیلیوں سمیت دو فلسطینیوں کے لقمہ اجل بننے کی اطلاع سامنے آئی ہے۔ یہ واقعہ یہودی عبادت گاہ میں پیش آیا ہے۔

'' العربیہ نیوز چینل '' کے مطابق اسرائیلی پولیس ترجمان نے بتایا ہے کہ ''دونوں حملہ آوروں کو موقع پر ہی گولی مار دی گئی ہے۔'' تاہم ان کے نام ابھی سامنے نہیں لائے گئے ہیں۔

پولیس ترجمان کے مطابق ''فلسطینی حملہ آور چاقووں اور کلہاڑیوں سے مسلح تھے۔ اس سے پہلے کہ انہیں گولیوں کا نشانہ بنایا جاتا یہ کم از کم تین افراد کو چاقووں وغیرہ سے زخمی کر چکے تھے۔''

ترجمان مائیکی روزنفیلڈ نے کہا پولیس اس واقعے کو دہشت گردی کے طور پر لے رہی ہے۔'' اسرائیلی ایمبولیس سروس کے ترجمان میگن ڈیوڈ نے اسرائیلی فوجی ریڈیو سروس کو بتایا '' جن تین افراد کو زخمی حالت میں ہسپتال داخل کیا گیا ہے ان میں سے ایک کی حالت نازک ہے۔''

تاہم اسرائیلی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ موقع پر زیادہ زخمی دیکھے گئے ہیں۔ اس واقعے کے علاوہ ایک یہودی بستی پر بھی نامعلوم حملہ آور کی طرف سے فائرنگ کرنے کی خبر ملی ہے تاہم اس واقعے کی فی الحال کوئی تفصیل سامنے نہیں آ سکی ، نہ ہی کسی جانی نقصان یا زخمی کی اطلاع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں