داعش کا اہم رہنما عراقی صوبہ انبار میں ہلاک

اتحادیوں کی کارروائی میں 25 عسکریت پسندوں کی بھی ہلاکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا اور اس کے اتحایوں کی طرف سے کی گئی ایک فضائی کارروائی کے دوران میں داعش کے ایک سنیئیر رہنما کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ سینان مطیب کو داعش کا عراقی صوبہ انبار میں امیر کہا جاتا تھا۔

سینان مطیب انبار پر ہونے والی فضائی کارروائی میں مارا گیا ہے۔ اس کارراوائی کے دوران مزید 25 عسکریت پسند بھی ہلاک ہو گئے ہیں۔ اس علاقے میں عسکریت پسندوں نے سینکڑوں قبائلیوں کو ہلاک کر دیا تھا۔

امریکا داعش کے خلاف سنیوں کو مسلح کرنے کی بھی تیاری کر رہا ہے، تاکہ داعش کے اس مضبوط مرکز کو کمزور کیا جا سکے۔ کرد اور شیعہ جنگجو بھی داعش کے خلاف عراقی حکومت کی مدد کر رہے ہیں۔

امریکا نے داعش کے خلاف ماہ اگست میں فضائی کارروائیاں شروع کی تھیں۔ تاہم اس کے باوجود داعش صوبہ انبار میں ابھی تک پیش قدمی کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں