حلب میں اسدی فوج کے اہم ٹھکانے کی طرف النصرہ کی پیش قدمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام میں القاعدہ کی ذیلی تنظیم النصرہ فرنٹ نے شورش زدہ شہرحلب میں بشارالاسد کے حامیوں کا گڑھ سمجھے جانے والے شمالی قصبے الزھراء اور اہم فوجی ٹھکانے کی طرف پیش قدمی شروع کی ہے۔ اطلاعات کے مطابق النصرہ فرنٹ کے جنگجوئوں نے الزھراہ ٹائون کے قریب متمرکز شامی فوج کے مختلف ٹھکانوں پر بارود سے بھری گاڑیوں سے حملے کیے ہیں جس کے بعد فریقین میں ایک دوسرے کے خلاف بھاری اوردرمیانے درجے کے ہتھیاروں سے حملے جاری ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق انسانی حقوق کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ النصرہ فرنٹ کے جنگجوئوں نے شمالی حلب میں صدر بشارالاسد کے اہم مرکز الزھراقصبے کے جنوب اور مشرقی اطراف سے حملے کیے جس کے بعد سرکاری فوجیوں کو پسپائی اختیار کرنا پڑی ہے۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ کار بم دھماکوں اور اندھا دھند گولہ بارے کے نتیجے میں اسدی فوج کے دسیوں اہلکار ہلاک اور زخمی ہوچکے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق بم دھماکوں کے بعد النصرہ فرنٹ کی طرف کافی پیش قدمی کرلی ہے تاہم سرکاری فوج کے دفاع کے لیے صدر بشارالاسد کی فضائیہ کے جنگی طیارے بھی فرنٹ کے جنگجوئوں پربمباری کررہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں