.

النصرہ محاذ کی حزب اللہ اور شامی فوج سے جھڑپیں

القلمون پہاڑی سلسلے میں دونوں اطراف کے 23 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی فوج اور لبنانی ملیشیا حزب اللہ اور القاعدہ کی شامی شاخ المعروف جبھ النصرہ کے جنگجووں کے درمیان ہفتے کی شب لڑائی میں دونوں جانب ہلاکتوں کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

لبنانی اور شامی سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ حزب اللہ کے تین جبکہ پانچ شامی فوجی اور جبھہ النصرہ کے کم سے کم پندرہ افراد مارے گئے۔ یہ معرکہ اس وقت رونما ہوا جب النصرہ فرنٹ نے القلمون پہاڑی سلسلے میں شام کے فلیطا گاوں پر حملہ کیا۔

حالیہ چند دنوں کے دوران شامی جنگجووں اور حزب اللہ کے درمیان لڑائی کا سلسلہ لبنان اور شام کی سرحدی پر واقع القلمون کے علاقے تک پھیل گیا ہے جس کے بعد لبنان کا بھی چار برس سے جاری شامی جنگ کی لپیٹ میں آنے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔

برطانیہ میں قائم انسانی حقوق کے مانیٹرنگ گروپ کا کہنا ہے کہ النصرہ فرنٹ کے جنگجووں نے حزب اللہ اور شامی فوج پر مارٹر فائر کئے جس کا جواب شامی فوج نے القلمون پر گولہ باری سے دیا۔ یاد رہے حزب اللہ نے شامی فوج کی مدد کے لئے اپنے ہزاروں جنگجو میدان جنگ میں اتار رکھے ہیں۔

ادھر لبنانی سیکیورٹی اداروں کے سربراہاں نے بتایا ہے کہ القلمون میں چھپے انتہا پسند قریبی واقع لبنانی دیہات پر قبضہ جمانے کی کوشش کر رہے ہیں تاکہ انہیں بہتر جنگی پوزیشن ہاتھ آ جائے۔