.

عراق میں ایرانی آپریشنل کمانڈر داعش کے حملے میں ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی پاسداران انقلاب کے مقرب ذرائع ابلاغ نے اطلاع دی ہے کہ عراق کے شہر سامراء میں سرگرم ایرانی آپریشنل کمانڈراورعسکری گروپ’’بدر‘‘ کے سربراہ مہدی نوروزی دولت اسلامی ’’داعش‘‘ کے حملے میں ہلاک ہو گئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق خبر رساں ایجنسی’’ابنا‘‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ کمانڈر مہدی نوروزی عراق کے شہر سامراء میں داعش کےخلاف ایک جھڑپ کے دوران زخمی ہونے کے بعد ہلاک ہوئے۔بعد ازاں ان کی میت عراق منتقل کردی گئی جہاں اسے راز داری میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق مقتول کمانڈر نوروزی ایران کی نیم سرکاری ملیشیا’’پاسیج‘‘ فورس کے مغربی ایرانی شہر کرمن شاہ کے’’الشہید تیموری نیا‘‘ کے بھی رکن تھے۔

ایران کی ایک دوسری خبر رساں ایجنسی’’مشرق نیوز‘‘ کے مطابق نوروزی عراق جانے سے قبل کئی بار شام کے محاذ جنگ پر جاتے رہے ہیں۔ انہوں نے شام میں شیعہ مقدسات کےد فاع کے لیے کئی معرکوں میں براہ راست حصہ لیا۔

خیال رہے کہ ایران کی پاسداران انقلاب نے نجی طورپر کئی عسکری گروپ قائم کررکھے ہیں جن سے ہزاروں رضاکار وابستہ ہیں۔ ان میں پاسیج فورس، القدس فورس اور دیگر گروپ شامل ہیں۔ یہ گروپ ایران کے مفادات کے لیے پڑوسی ملکوں میں جنگوں میں بھی براہ راست حصہ لے رہے ہیں۔ ان جنگجوئوں کی بڑی تعداد شام اور عراق میں بھی موجود ہے۔ اگرچہ ایران نے سرکاری سطح پر شام اور ایران میں براہ راست فوجی مداخلت کی تردید کی ہے تاہم اس سے قبل ذرائع ابلاغ اس بات کی تصدیق کرچکے ہیں کہ پاسداران انقلاب کی نگرانی میں ایرانی جنگجو شام اور عراق میں سرگرم عمل ہیں۔