‘فجرلیبیا‘ کا یک طرفہ طور پر جنگ بندی کا اعلان

جنیوا مذاکرات کو نتیجہ خیز بنانے کی مساعی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لیبیا میں دارالحکومت طرابلس اور کئی دوسرے شہروں میں سرگرم اسلامی شدت پسند تنظیم ’’فجر لیبیا‘‘ نے یک طرفہ طورپر جنگ بندی کا اعلان کیا ہے تاکہ آئندہ ہفتے جنیوا میں ہونے والے مذاکرات کو کامیابی کا ایک اور موقع دیا جاسکے۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق فجرلیبیا ملیشیا اور الشرق کی جانب سے جاری بیانات میں کہا گیا ہے کہ وہ یک طرفہ طورپر جنگ بندی کے اعلان پرقائم ہیں اور بات چیت کو ایک اور موقع دینا چاہتے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وہ اپنے طورپر جنگ بندی پرقائم ہیں اور کسی قسم کی کشیدگی میں پہل نہیں کریں گے تاہم دوسرے فریق کی جانب سے کسی بھی پرتشدد کارروائی کا مناسب جواب دیا جائے گا۔

خیال رہے کہ لیبیا میں قائم دو متحارب اور متوازی حکومتوں نے دو روز قبل اقوام متحدہ کی زیرنگرانی آئندہ ہفتے جنیوا میں مذاکرات پر اتفاق کیا ہے۔ فریقین کی جانب سے مذاکرات کی یہ کوشش اہمیت کی حامل سمجھی جا رہی ہے۔ توقع ہے کہ اقوام متحدہ کی نگرانی میں ہونے والی بات چیت میں لیبیا کے متحارب گروپ جنگ بندی پر آمادہ ہو جائیں گے۔ فجر لیبیا اور الشروق کی جانب سے یک طرف سیز فائربھی خوش آئند اقدام سمجھا جا رہا ہے۔

لیبیا کی متوازی حکومتوں کے مابین جنیوا مذاکرات کا پہلا دور کسی اہم پیش رفت کے بغیر ختم ہوگیا تھا اور مذاکرات کے دوسرے رائونڈ کا انتظار ہے۔ آئندہ ہفتے ہونے والے مذاکرات میں عسکری گروپوں کی باہم لڑائیوں کے خاتمے اور متفقہ قومی حکومت کی تشکیل بات چیت کےایجنڈے میں شامل اہم موضوعات ہوں گے۔

العربیہ کے ذرائع کے مطابق گذشتہ روز لیببا کے بلدیاتی نمائندوں نے آیندہ ہفتے جنیوا میں ہونے والے مذاکرات کی حمایت کی ہے۔ ذرائع کے مطابق بلدیاتی نمائندوں کا اجلاس آئندہ ہفتے کے وسط میں ہو گا جبکہ عسکری گروپوں کی قیادت کے درمیان پیش آئند ہفتے کے آخر میں مذاکرات ہوں گے۔

اقوام متحدہ کے مندوب برائے لیبیا برنارڈینو لیون کا کہنا ہے کہ وہ جنیوا مذاکرات کو نتیجہ خیز بنانے کی پوری کوشش کررہے ہیں تاہم اگر فریقین کسی حتمی ایجنڈے پر متفق نہ ہوئے معاملہ سلامتی کونسل میں بھی لے جایا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیبیا میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ سیاسی عدم اعتماد اور عسکری گروپوں کی آپس میں لڑائیاں ہیں۔ مسئلہ کا واحد حل نمائندہ قومی حکومت کی تشکیل ہے اور لیبیا کے تمام متحارب فریقوں کو قومی حکومت کے قیام پر متفق ہونا پڑے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں