.

حوثی لیڈر کی یمن میں بغاوت کو جواز فراہم کرنے کی کوشش

صدر ھادی کرپشن کا دفاع کر رہے ہیں: عبدالملک حوثی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں صدرعبد ربہ منصور ھادی کے خلاف بغاوت کرنے والے شیعہ مسلک کے حوثی گروپ کے سربراہ عبدالملک حوثی نے اپنی بغاوت کو جواز فراہم کرنے کے لیے حکومت پر کرپشن کو فروغ دینے اور مذاکرات سے فرار اختیار کرنے کے الزامات عاید کیے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت کے خلاف ان کی بغاوت کا سبب کرپشن ہے۔ وہ ملک کو کرپشن، ہرطرح کی بدعنوانی، فرقہ واریت اور دہشت گردی سے پاک کرنا چاہتے ہیں۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ حوثی لیڈر عبدالملک کی طرف سےاس نوعیت کا بیان خلاف توقع ہرگز نہیں کیونکہ انہوں نے منتخب صدرتمام سیاسی قوتوں کے اشتراک سے قائم کی گئی عبوری حکومت کے خلاف بغاوت کے لیے کوئی ایسا جواز ضرور تراشنا تھا جس کے ذریعے وہ اپنی باغیانہ کارروائیوں کو ڈھال فراہم کر سکے۔ مبصرین کا خیال ہے کہ ملک میں افراتفری پھیلانے والے حوثی حکومت پر کرپشن اور بدامنی کو ہوا دینے کا الزام تو عاید کرتے ہیں مگر اپنی سرگرمیوں پر نظر نہیں رکھتے جن کے نتیجے میں ملک اس وقت بدترین انارکی کا شکار ہو چکا ہے۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق عبدالملک حوثی نے گذشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ برسراقتدار گروپ اور صدر ھادی قومی مذاکرات کے دوران طے شدہ امور سے فرار اختیار کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مذاکرات میں جن امور پر اتفاق ہو چکا ہے ان پرعمل درآمد ہی ملک کو بحران سے نکال سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ صدر ھادی کرپشن کرنے والوں کو تحفظ فراہم کر رہے ہیں اور خود بھی کرپشن کرنے والوں میں سر فہرست ہیں۔