.

چاقو کے حملے میں 10 اسرائیلی زخمی، حملہ آور فلسطینی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کے دارالحکومت تل ابیب میں ایک فلسطینی شہری نے بس میں گھس کر چاقو سے پے در پے وار کر کے کم سے کم 10 یہودی آباد کاروں کو زخمی کر دیا۔ زخمیوں میں سے دو کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

اسرائیلی پولیس کی ترجمان لوبا سمری کے مطابق پولیس نے ملزم کو فائرنگ کے بعد زخمی حالت میں گرفتار کرلیا۔ اسے طبی امداد کی فراہمی کےلیے اسپتال لے جایا گیا ہے جہاں اس کاعلاج جاری ہے۔ ترجمان کے مطابق پولیس کی فائرنگ سے ایک گولی فلسطینی حملہ آور کی ٹانگ میں لگی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بدھ کو علی الصباح مقبوضہ غرب اردن سے تعلق رکھنے والے ایک فلسطینی نے بس میں گھس کرچار یہودیوں کو چاقو کے وار سے زخمی کردیا۔ اس کارروائی کے بعد اس نے بس سے فرار ہونے کے بعد مزید پانچ یہودیوں کو بھی چاقو گھونپا جس کے نتیجے میں وہ بھی زخمی ہوگئے۔ زخمیوں میں سے دو کی حالت خطرے میں بتائی جاتی ہے۔ پولیس نے حملہ آور کو فرار ہوتے ہوئے گولیاں ماریں۔ بعد ازاں اسے زخمی حالت میں حراست میں لے لیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ حالیہ چند مہینوں میں مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں یہودی آباد کاروں اور فلسطینیوں کے درمیان پُرتشدد واقعات میں غیرمعمولی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

گذشتہ برس13 نومبر کو شمالی اسرائیل میں ایک بس میں چاقو سے کیے گئے حملے میں ایک اسرائیلی فوجی ہلاک ہوگیا تھا۔اس واقعے کے تین روزبعد مشرقی بیت المقدس میں اسی طرح کے حملے میں ایک یہودی آباد کار زخمی ہوگیا تھا۔ پولیس کے مطابق کارروائی ایک فلسطینی نے کی تھی۔

تین دسمبر کو مشرقی یروشلم میں ’میچور ادومیم‘کالونی کے قریب ایک سیکیورٹی اہلکار نے فلسطینی شہری کوگولی مار دی تھی۔ اس پر دو یہودی آباد کاروں کو خنجر کے وار سے زخمی کرنے کا الزام عاید کیا گیا تھا۔