لبنانی سرحد سے دراندازی، شمالی اسرائیل میں فوج ہائی الرٹ

اسرائیلی آرمی چیف کا بیرون ملک دورہ منسوخ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی فوج نے گذشتہ روز لبنان کی سرحد سے پانچ افراد کی دراندازی کی اطلاع کے بعد مُلک کے شمالی علاقوں بالخصوص شام اور لبنان کی سرحد سے متصل یہودی کالونیوں میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی ہے۔

وادی گولان میں العربیہ کے نامہ نگار نےاطلاع دی ہے کہ صہیونی فوج نے شمالی علاقے میں قائم یہودی کالونیون کفارگیلادی اور مسحاب عام سمیت آس پاس کے علاقوں میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کرنے کے بعد شہریوں کو گھروں سے باہر نہ نکلنے کی ہدایت کی ہے۔ قبل ازیں اسرائیلی میڈیا نے ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی تھی کہ شمالی اسرائیل میں لبنان کی سرحد سے پانچ افراد نے دراندازی کی کوشش کی تاہم سرکاری سطح پر اس دعوے کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

نامہ نگار کے مطابق یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ آیا درانداز اسرائیل داخلے میں کامیاب ہو گئے تھے یا نہیں۔ تاہم اس واقعے کے بعد اسرائیلی آرمی چیف نے اپنا بیرون ملک دورہ ملتوی کر دیا تھا۔

عینی شاہدین کے مطابق لبنانی سرحد سے پانچ افراد کی سرحدی باڑ عبور کرنے کی اطلاع کے بعد فوج اور بارڈر فورسز کے اہلکاروں کی بڑی تعداد سرحد پر پھیل گئی تھی۔ فوج نے سرحد کے قریب تمام شاہرائوں کی ناکہ بندی کرکے پیدل چلنے والوں اور گاڑیوں کی بھی تلاشی کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔

لبنان اور اسرائیل کے درمیان سرحد کے قریب واقع مرکزی شاہراہ کو ہرقسم کی ٹریفک کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔ صہیونی فوج کے ذرائع کے مطابق لبنان اور اسرائیل کے درمیان سرحد پر زیرزمین کھودی گئی سرنگوں کے راستے سرحد پار سے دراندازی کا خدشہ ہے جس کے پیش نظر سرحدی علاقوں میں سیکیورٹی سخت کر دی گئی ہے۔

اسرائیل کی لبنان اور شام کی سرحدوں سے متصل علاقوں میں فوج کا گشت مسلسل تیسرے روز بھی جاری رہا۔ اسرائیلی فوجی شمالی فلسطین میں کھیتوں میں کام کرنے والے مقامی شہریوں اور مزدوروں سے بھی پوچھ گچھ کرتے رہے ہیں۔ دوسری جانب لبنان میں اسرائیلی سرحد سے متصل علاقوں میں اقوام متحدہ کی امن فوج’’یونیفیل‘‘ کے مسلح دستوں کو بھی گشت میں مصروف دیکھا گیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے جنگی طیاروں کی جانب سے لبنان کے سرحدی علاقے مزارع شعبا کے قریب نچلی پروازیں بھی مسلسل جاری ہیں اور سرحد پر متعین اہلکار دوربینوں کی مدد سے مسلسل نگرانی کر رہے ہیں۔

خیال رہے کہ تین روز قبل شام میں اسرائیل کے ایک مبینہ فضائی حملے میں حزب اللہ کے چھ اور ایرانی پاسداران انقلاب کا ایک عہدیدار ہلاک ہو گیا تھا۔ اس واقعے کے بعد ایران اور حزب اللہ نے اسرائیل کو سخت کارروائی کی دھمکی دی ہے۔ ایران اور حزب اللہ کی دھمکیوں کے بعد اندرون اور بیرون اسرائیل سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں