مصر میں خواتین مبلغات کو تبلیغ کی اجازت مل گئی

مساجد سے منسلک شعبوں سے وابستہ ہو سکیں گی: حکومتی اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصری حکومت نے مسلمان خواتین کے تبلیغ کے میدان میں مواقع پیدا کرنے کا اہتمام کیا ہے۔ سرکاری آن لان اخبار الاہرام کے مطابق اب خواتین کو مساجد سے منسلک تبلیغی شعبے ، تعلیمی شعبے کے ساتھ ساتھ صحت عامہ کے شعبے خدمات انجام د ینے کی اجازت ہو گی۔

خواتین اس حوالے سے مساجد کے فورمز اور لیکچرز کے شعبوں میں کام کر سکیں گی۔ یہ پیش رفت سابق عبوری صدر عدلی منصور کے جاری کیے گئے احکامات اور حکومت مذہبی انتہا پسندی کے خاتمے کے لیے کوششوں کی ایک کڑی کے حوالے سے ہے۔ تاکہ مساجد کے معاملات کی نگرانی بھی کی جا سکے۔

واضح رہے معزول صدر محمد مرسی کے حامیوں پر الزام ہے کہ وہ مساجد کو اپنی حکومت مخالف سرگرمیوں کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ خواتین کو اس معاملے میں کردار دینے سے اخوان کے کار کنوں کا کردار محدود ہو جائے گا۔

حکومت کے ہاں رجسٹرڈ مبلغین کو ہدایت کی گئی ہے کہ جمعہ کی نمازوں کے موقع پر قومی اتحاد کے فروغ کو اپنا موضوع بنائیں۔ وزارت کی طرف سے خبردار کیا گیا ہے کہ اگر کوئی غیر قانونی طور پر ملک کے کسی بھی حصے میں تبلیغ کرے گا تو اسے ایک سال قید اور سات ہزار امریکی ڈ الر تک کے جرمانہ کی سزا دی جا سکے گی

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں