.

یہودی شرپسندوں نے فلسطین میں مسجد کے بعد چرچ کو آگ لگا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطین کے شہر مقبوضہ بیت المقدس میں جمعرات کے روز یہودی آباد کاروں نے ایک مقامی چرچ ’’دور متسیون‘‘ میں آگ لگا کر اس کا ایک حصہ جلا ڈالا۔ چوبیس گھنٹے میں فلسطین میں عبادت گاہ کونذرآتش کیے جانے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ قبل ازیں بدھ کو غرب اردن میں یہودی اشرار نے ایک مسجد کو آگ لگادی تھی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جمعرات کو یہودی آباد کاروں نے چرچ میں آگ لگانے سے قبل اس کی بیرونی دیواروں پر حضرت مسیح علیہ السلام کی شان میں گستاخانہ نعروں کی چاکنگ بھی کی۔

اسرائیلی پولیس کی جانب سے چرچ کونذرآتش کیے جانے کے واقعے کی تحقیقات جاری ہیں۔ پولیس نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ چرچ کو آگ لگانے میں ’’تدفیع الثمن‘‘ نامی ایک یہودی شدت پسند گروپ ملوث ہے۔ اسی گروپ نے ایک روز قبل غرب اردن میں مبینہ طور پر ایک مسجد کو آگ لگا کر خاکستر کردیا تھا۔

چرچ کو لگنے والی آگ نے عیسائی پادریوں کے زیراستعمال ایک غسل خانہ بھی جل کر خاکستر ہوگیا۔