.

داعش کی باہمی لڑائی میں 9 جنگجو ہلاک: مانیٹرنگ گروپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں جاری بحران پر نظر رکھنے والے مانیٹرنگ گروپ کا کہنا ہے کہ دولت اسلامیہ عراق وشام [داعش] کے جنگجوئوں کے درمیان آپسی لڑائی میں 9 جنگجو ہلاک ہوگئے۔

برطانیہ میں قائم شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق نے بتایا ہے کہ داعشی جنگجوئوں کے درمیاں ترک سرحد کے جنوب میں الباب کے علاقے میں جھڑپیں ہوئیں۔ یہ جھڑپیں ترکی فرار ہونے والوں اور انہیں روکنے پر مامور داعشی جنگجوئوں کے درمیان ہوئیں۔ جھڑپوں کے دوران بھاگنے کی کوشش کرنے والے پانچ جبکہ انہیں روکنے والے چار افراد ہلاک ہوگئے۔

آبزرویٹری کے چئیرمین رامی عبدالرحمان کے مطابق میدان جنگ چھوڑ کر بھاگنے والوں میں ایک تیونسی اور 9 یورپی باشندے شامل تھے۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ جب داعش نے اپنے ہی جنگجوئوں کو قتل کیا ہو۔ اس سے پہلے بھی ماہ دسمبر میں آبزرویٹری نے بتایا تھا کہ گروپ نے دو ماہ کے دوران گھر واپس جانے کی کوشش کرنے والے 120 جنگجوئوں کو مار دیا تھا۔

ہفتے کے روز جھڑپوں کا آغاز اس ہوا جب گروپ کی زیر انتظام جیل سے دس جنگجوئوں نے فرار ہونے کی کوشش کی۔ رامی عبدالرحمان نے علاقے میں موجود ذرائع کے مطابق بتایا کہ ان جنگجوئوں نے اس سے پہلے بھی باہر نکلنے کی کوشش کی تھی مگر انہیں جیل میں ڈال دیا گیا تھا۔

آبزرویٹری کے مطابق جھڑپوں میں بچ جانے والے پانچ جنگجوئوں کو دوبارہ گرفتار کر لیا گیا۔