.

اسرائیل کے سوا تمام ممالک کا دل سے احترام کرتے ہیں: عراق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق نے اپنی خارجہ پالیسی کے خدو خال واضح کرتے ہوئے کہا ہے کہ بغداد عالمی برادری کے ساتھ کھلے دل سے تعاون کرنے اور تمام ممالک کا احترام کرنے کی پالیسی پرعمل پیرا تاہم اسرائیل کے لیے ہمارے ہاں کوئی جگہ نہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراق کے بیرون ملک متعین سفیروں کی چار روزہ کانفرنس میں اس بات کات تعین کیا جا رہا ہے کہ عراق عالمی سفارت کاری کو کس نہج پر آگے بڑھا رہا ہے۔ بدھ کے روز سفارت کاروں کی کانفرنس کے موقع پر صدر مملکت فواد معصوم، وزیراعظم حیدر العبادی اور پارلیمنٹ کے اسپیکر سلیم الجبوری بھی موجود تھے۔

تینوں اہم حکومتی عہدیداروں نے بیرون ملک سفارتی خدمات انجام دینےوالے سفیروں کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ بیرون ملک متعین سفیروں نے عراق کے عالمی برادری کے ساتھ تعلقات مضبوط بنانے میں اہم کرادار ادا کیا ہے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئےعراقی وزیر خارجہ ابراہیم الجعفری نے ان کا ملک سوائے اسرائیل کے تمام ممالک کا یکساں احترام کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بعض پڑوسی ممالک کے ساتھ خطے کے مسائل کے حوالے سے پائے جانے والے اختلافات سے قطع نظر تمام ممالک کےساتھ بغداد اپنے تعلقات کو مستحکم کرنا چاہتی ہے۔ تاہم ہمارے دل میں اسرائیل کے لیے کوئی نرم گوشہ نہیں ہے۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ عراق عالمی برادری کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن پر کھڑا ہے۔ اس جنگ میں عراق کی کامیابی عالمی برادری کے ساتھ اچھے سفارتی تعلقات کے قیام ہی سے ممکن ہے۔

خیال رہے کہ بغداد میں جاری چار روزہ کانفرنس میں عراق کے بیرون ملک سفیر حصہ لے رہے ہیں۔ کانفرنس کے انعقاد کا مقصد ملک کو عالمی سطح پر درپیش سیاسی، سفارتی، تجارتی اور عسکری شعبے میں مشکلات کے حل کے لیے کوئی مربوط لائحہ عمل طے کرنا ہے۔