عراق میں داعش کے ہاتھوں 300 قبائلیوں کا بہیمانہ قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ عراق و شام 'داعش' نے یرغمال بنائے گئے عراق کے مختلف قبائل کے تین سو افراد کو گولیاں مار کر قتل کر دیا ہے۔

عراق میں الانبار گورنری کے البونمر قبیلے کے سردار نعیم الکعود نے بتایا کہ دولت اسلامی نے البومحل، الکرابلہ، سلمان اور دیگر متعدد قبائل کے تین سو یرغمالیوں کو گولیاں مار کر قتل کر دیا ہے۔

البونمر قبیلے کے سربراہ نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ٹیلیفون پر بتایا کہ بعض قبائلیوں کو شام میں قتل کیا گیا ہے جبکہ دیگر کو شام اور عراق کی سرحد پر فنا کے گھاٹ اتارا گیا۔

ادھر عراق میں موصل کے گورنر اثیل النجیفی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر پوسٹ کردہ بیان میں داعش کے ہاتھوں عراق کے تین سو قبائلیوں کے قتل کی تصدیق کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ داعش نے حالیہ چند دنوں میں یرغمال بنائے گئے تین سو قبائلیوں کو قتل کیا۔

النجیفی کا کہنا ہے کہ داعش کے ہاتھوں موت کے گھاٹ اتارے گئے عراقی شہریوں میں سے آدھےفوج اور پولیس کے سابقہ اہلکار شامل ہیں جبکہ باقی عام شہری ہیں۔ ان سب کا تعلق نینویٰ گورنری سے ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں