غربِ اردن:اسرائیلی فوج کی کارروائی،29 فلسطینی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیلی فوج نے دریائے اردن کے مغربی کنارے کے شہر نابلس میں چھاپہ مار کارروائیوں کے دوران اسلامی تحریک مزاحمت (حماس) سے تعلق کے الزام میں انتیس فلسطینیوں کو گرفتار کر لیا ہے۔

فلسطین کے سکیورٹی حکام نے بتایا ہے کہ ان افراد کو نابلس اور اس کے نواح سے گرفتار کیا گیا ہے۔اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ پولیس اور داخلی سکیورٹی سروس شین بیت نے مشترکہ طور پر چھاپہ مار کارروائی کی تھی لیکن اس نے مزید تفصیل نہیں بتائی۔

البتہ اسرائیلی میڈیا نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ گرفتار کیے گئے افراد میں سے بعض صہیونی ریاست میں حملوں کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔حماس کے ترجمان حسام بدران نے کہا ہے کہ ان گرفتاریوں سے اسرائیل کی تشویش کی عکاسی ہوتی ہے اور اس کی جانب سے گذشتہ برسوں کے دوران کریک ڈاؤن کارروائیوں کے باوجود حماس کو تقویت ملی ہے۔

واضح رہے کہ حماس کی غزہ کی پٹی میں گذشتہ آٹھ سال سے عمل داری قائم ہے لیکن مغربی کنارے میں اس کی حریف، صدر محمود عباس کی جماعت فتح کی حکومت ہے اور اس علاقے میں اس کا زیادہ اثر ورسوخ نہیں ہے۔البتہ اس کے کارکنان اور ہمدردوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے اور اسرائیلی سکیورٹی فورسز انھیں دبانے کے لیے آئے دن پکڑ دھکڑ کی کارروائیاں کرتی رہتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں