.

عراق :صوبہ الانبار میں 90 ہزار افراد بے گھر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے مغربی صوبے الانبار میں سرکاری سکیورٹی فورسز اور سخت گیر گروپ دولت اسلامی عراق وشام (داعش) کے جنگجوؤں کے درمیان لڑائی کے بعد گذشتہ ایک ہفتے کے دوران نوّے ہزار سے زیادہ افراد بے گھر ہوگئے ہیں۔

داعش کے جنگجو گذشتہ ہفتے کے دوران الانبار کے دارالحکومت الرمادی کے ایک حصے میں داخل ہوگئے ہیں اور انھوں نے اس کے نواحی دیہات پر قبضہ کر لیا ہے۔ عراق میں اقوام متحدہ کی انسانی رابطہ کار لیس گرینڈے نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''بے گھر ہونے والے افراد کو جانیں بچانے کے لیے امداد ،خوراک اور پانی مہیا کرنا ہماری اولین ترجیح ہے۔اس کے علاوہ ان کے لیے خیموں کا انتظام کیا جارہاہے''۔

عراقی فورسز داعش کے جنگجوؤں کے خلاف رمادی اور اس کے نواح میں نئی کارروائی کی تیاری کررہی ہیں۔حکام نے بتایا ہے کہ داعش کے خلاف لڑائی کے لیے بغداد سے فورسز کی نئی کمک بھیجی گئی ہے۔

واضح رہے کہ عراق میں جنوری 2014ء کے بعد کم سے کم ستائیس لاکھ افراد لڑائی کے نتیجے میں بے گھر ہوئے ہیں۔ان میں سے چار لاکھ صوبہ الانبار میں بے گھر ہوئے تھے۔