.

ایرانی بحریہ کی سنگاپور کے جہاز پر فائرنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک امریکی عہدیدار کے مطابق ایران کی پاسداران انقلاب بحریہ نے سنگاپور کے جھنڈا بردار کارگو جہاز 'دی الپائن ایٹرنٹی' پر خلیج کے بین الاقوامی پانیوں میں وارننگ شاٹ فائر کردئیے جس کے نتیجے میں جہاز متحدہ عرب امارات کے حدود میں داخل ہونے پر مجبور ہوگیا۔

امریکی عہدیدار کا کہنا تھا کہ ابتدائی معلومات کےمطابق متحدہ عرب امارات نے کارگو جہاز کی جانب سے مدد کی درخواست پر کوسٹ گارڈ کی کشتیاں بھیج دیں اور جس کے نتیجے میں ایرانی کشتیوں نے کارگو جہاز کا پیچھا چھوڑ دیا۔ امریکی عہدیدار کے مطابق اس موقع پر ایک امریکی بحری جہاز بھی تقریبا 30 کلومیٹر کی دوری پر موجود تھا مگر اس سے مدد کی درخواست نہیں کی گئی تھی جس وجہ سے اس نے مداخلت نہیں کی۔

جہاز کی مینیجر نارویجین کمپنی 'ٹرانس پیٹرول' کے ایک ترجمان کے مطابق جہاز پر جمعرات کی صبح آٹھ بجے حملہ کیا گیا کہ جب وہ اماراتی شہر فجیرہ کی طرف جارہا تھا۔

ترجمان کا کہنا تھا "حملے کی نوعیت ابھی تک واضح نہیں ہوسکی ہے۔ جہاز اماراتی پانیوں میں ہے اور ابھی جبل علی کی بندرگاہ پر موجود ہے۔ جہاز اور اس کے عملے کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے اور دونوں بحفاظت متحدہ عرب امارات میں موجود ہیں۔"

کمپنی کے ترجمان کے مطابق سنگاپور کے حکام کو اس حملے سے متعلق آگاہ کردیا گیا ہے۔