.

لبنان کی وادی بقاع میں اسرائیلی حملے کے بعد دھماکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے مشرقی علاقے وادی بقاع غربی میں واقع قصبے صغبین میں اتوار کو ایک دھماکا ہوا ہے۔لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے ملکیتی المنار ٹیلی ویژن چینل نے اطلاع دی ہے کہ یہ دھماکا اسرائیلی فضائی حملے کے نتیجے میں ہوا ہے۔

المنار کی رپورٹ کے مطابق اس حملے کا مقصد ایک بغیر پائیلٹ طیارے (ڈرون) کو تباہ کرنا تھا۔قبل ازیں سکیورٹی ذرائع نے بھی یہ اطلاع دی تھی کہ دھماکا لبنان میں اسرائیل کے فضائی حملے کا نتیجہ ہوسکتا ہے۔

ان ذرائع کا کہنا تھا کہ واقعے کی تحقیقات کی جارہی ہے۔فوری طور پر اسرائیلی فضائی حملے میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع سامنے نہیں آئی ہے۔اسرائیلی فوج کی خاتون ترجمان نے لبنانی علاقے میں فضائی حملے کے بارے میں کچھ کہنے سے گریز کیا ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیل کے لڑاکا طیارے پڑوسی ملک شام میں گذشتہ قریباً سوا چار سال سے جاری خانہ جنگی کے دوران متعدد فضائی حملے کر چکے ہیں اور ان فضائی حملوں میں مبینہ طور پر شام سے حزب اللہ کے لیے بھیجے گئے ہتھیاروں کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

اسی سال کے اوائل میں شام کے سرحدی علاقے القنیطرہ میں اسرائیلی ہیلی کاپٹر کی ایک گاڑی پر بمباری سے ایک ایرانی جنرل اور حزب اللہ کے متعدد کمانڈر ہلاک ہوگئے تھے۔اس کے جواب میں حزب اللہ نے لبنان کے ساتھ واقع اسرائیل کے سرحدی علاقے میں راکٹ حملہ کیا تھا جس میں دو اسرائیلی فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔