.

اسرائیل میں 6 بدّو داعش کی حمایت کے الزام میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کی داخلی سکیورٹی ایجنسی شین بیت نے داعش کی حمایت میں ایک سیل تشکیل دینے کے الزام میں چھے بدّووں کو گرفتار کر لیا ہے۔

اس سکیورٹی ایجنسی کا کہنا ہے کہ ان گرفتار افراد میں چار اسکول ٹیچر ہیں اور انھوں نے اپنے اسکولوں میں طلبہ کو داعش کے نظریات سے متعارف کرانے کی کوشش کی تھی۔

اس کے دعوے کے مطابق گرفتار افراد شام جانے کا ارادہ رکھتے تھے جہاں وہ داعش کی صفوں میں شامل ہو کر لڑنا چاہتے تھے۔داعش نے عراق اور شام کے قریباً تیس فی صد علاقے پر قبضہ کرکے اپنی حکومت قائم کررکھی ہے اور وہاں اس کے جنگجو اپنی تفہیم اور نظریے کے مطابق اسلامی قوانین کا سخت انداز میں نفاذ کرتے ہیں۔

شین بیت کا کہنا ہے کہ گرفتار افراد صحرائے نگیف میں واقع بد٘و آبادی پر مشتمل قصبے حرا سے تعلق رکھتے ہیں۔واضح رہے کہ بد٘و اسرائیل کا ایک اقلیتی گروپ ہیں اور ان کی کل آبادی ایک لاکھ اسّی ہزار نفوس پر مشتمل ہے۔