.

عراق : کار بم دھماکے میں 21 افراد ہلاک ،50 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں حملہ آوروں نے عید کی خوشیاں مناتے شہریوں کو خون میں نہلا دیا ہے اور انھوں نے دارالحکومت بغداد کے شمال مشرق میں واقع ایک قصبے میں کار بم دھماکا کیا ہے جس کے نتیجے میں اکیس افراد ہلاک اور پچاس سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی حکام کے مطابق جمعہ کی شب بغداد سے تیس کلومیٹر شمال مشرق میں صوبہ دیالا میں واقع قصبے خان بنی سعد میں ایک مصروف مارکیٹ میں بارود سے بھری کار کو دھماکے سے اڑا دیا گیا ہے۔اس وقت لوگ عیدالفطر کی خوشیاں منا رہے تھے اور خریداری کررہے تھے۔

فوری طور پر کسی گروپ نے اس کار بم دھماکے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے لیکن عراق کے ایک بڑے حصے پر قابض سخت گیر جنگجو گروپ داعش پر دیالا اور دوسرے علاقوں میں اس طرح کے بم حملوں کے الزامات عاید کیے جاتے رہے ہیں اور یہ تنظیم خود بھی خاص طور پر اہل تشیع اور سکیورٹی فورسز کو کار بم حملوں میں نشانہ بناتی رہتی ہے۔

عراقی پولیس کے ایک افسر میجر احمد التمیمی نے بتایا ہے کہ دھماکا اس قدر شدید تھا کہ اس سے مارکیٹ تباہ ہوگئی ہے اور لاشیں ادھر ادھر بکھر گئیں۔بعض لوگوں نے مرنے والوں بچوں کے اعضاء سبزی والے باکسز میں اکٹھے کیے ہیں۔بم دھماکے کے بعد مشتعل ہجوم نے شاہراہ پر کھڑی کاروں کے شیشے توڑ دیے ہیں اور توڑ پھوڑ کی ہے۔