.

رمادی میں ہزیمت، داعشی جنگجو آپس میں لڑ پڑے،15 ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے شمالی شہر الرمادی میں سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں شکست خوردہ شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ عراق وشام "داعش" کے جنگجو آپس میں الجھ پڑے جس کے نتیجے میں کم سے کم 15 جنگجوئوں کے ہلاک اور زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراقی فوج کے زیرانتظام "جنگ میڈیا سیل" نے جاسوسی آلات کی مدد سے داعشی جنگجوئوں کے درمیان ہونے والی لڑائی اور گالم گلوچ کو ریکارڈ کیا ہے۔ رمادی میںداعش" کا پرچم لہرانے میں ناکامی پر دہشت گرد ایک دوسرے کو مورد الزام ٹھہرا رہے ہیں۔ اس الزام کے بعد جنگجو دو گروپوں میں تقسیم ہوجاتے ہیں اور ایک دوسرے کی گردنیں کاٹنے لگے ہیں۔

ذرائع کے مطابق داعشی جنگجوئوں میں بحث و تکرار اور بعد ازاں ایک دوسرے پر حملے الرمادی کے مشرق میں عراقی فوج کے سامنے امن کا جھنڈا لہرانے کے معاملے پر ہوا۔ داعشی گروپوں نے ایک دوسرے پر الزام تراشی کی، گالیاں دیں اور پھر گولیاں چلا دیں جس کے نتیجے میں ڈیڑھ درجن کے قریب جنگجو ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔