.

اسرائیلی فورسز کی غربِ اردن میں چھاپہ مار کارروائی

حماس ،اسلامی جہاد اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان جھڑپ ،پانچ فلسطینی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کی غربِ اردن میں سوموار کی شب چھاپہ مار کارروائی کے دوران پانچ فلسطینی زخمی ہوگئے ہیں۔اسرائیلی اور فلسطینی ذرائع کے مطابق اسرائیلی فوج نے ایک مزاحمت کار کی گرفتاری کے لیے کارروائی کی تھی اور اس میں ایک فوجی بھی زخمی ہوگیا ہے۔

اسرائیلی فوج نے مقبوضہ مغربی کنارے میں کارروائی کی تصدیق کی ہے مگر چھاپے کی نوعیت یا زخمیوں کی تصدیق نہیں کی ہے۔غرب اردن کے شمالی قصبے جنین میں اسلامی تحریک مزاحمت (حماس) کے ایک ذریعے نے بتایا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں نے ان کے دو کارکنان کو گرفتار کر لیا ہے لیکن جہاد اسلامی کے ایک سینیر رہ بسام السعدی گرفتار ہونے سے محفوظ رہے ہیں۔

جنین کے مکینوں نے بتایا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں اور حماس اور اسلامی جہاد کے مزاحمت کاروں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے اور پانچ فلسطینی گولیاں لگنے سے زخمی ہوئے ہیں۔

دوسری جانب اسرائیلی ریڈیو نے اطلاع دی ہے کہ خصوصی فورسز سے تعلق رکھنے والے ایک فوجی کو جھڑپ کے دوران معمولی زخم آئے ہیں اور اس کو اسرائیل کے شمالی شہر حیفا کے ایک اسپتال میں منتقل کردیا گیا ہے۔