بغداد میں نقاب پوشوں نے 18 ترکوں کو اغوا کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد میں نامعلوم نقاب پوشوں سے ترکی سے تعلق رکھنے والے اٹھارہ تعمیراتی ورکروں کو اغوا کر لیا ہے۔ترکی نے اپنے ان شہروں کے اغوا کی تصدیق کی ہے۔

ترکی کے نائب وزیراعظم نعمان قرطلمس نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ''بغداد میں ایک تعمیراتی کمپنی کے لیے کام کرنے والے اٹھارہ ترک شہریوں کو اغوا کیا گیا ہے۔ہم عراق کی وزارت داخلہ کے ساتھ قریبی رابطے میں ہیں اور امید ہے کہ یہ معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہوجائے گا''۔

عراق کی وزارت داخلہ کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل سعد معان نے برطانوی خبررساں ادارے رائیٹرز کو بتایا ہے کہ ان ورکروں کو بغداد کے شمال مشرقی علاقے حبیبیہ سے بدھ کی صبح اغوا کیا گیا تھا۔انھوں نے یرغمال ترکوں کی تعداد سولہ بتائی ہے۔تاہم ایک پولیس کرنل نے ان کی تعداد سترہ بتائی ہے اور وزارتِ داخلہ کے ایک اور عہدے دار نے کہا ہے کہ اٹھارہ ترکوں کو اغوا کیا گیا ہے۔

یادرہے کہ گذشتہ سال داعش نے شمالی شہر موصل میں چھیالیس ترک شہریوں کو اغوا کر لیا تھا لیکن انھیں تین ماہ کے بعد رہا کردیا تھا اور انھیں کوئی نقصان نہیں پہنچایا تھا۔ترک حکومت نے تب ان کی رہائی کے لیے کسی قسم کی سودے بازی سے انکار کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں