.

آیت اللہ علی السیستانی کا یرغمال 18 ترکوں کی رہائی کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے سرکردہ شیعہ عالم دین آیت اللہ علی السیستانی نے دارالحکومت بغداد سے اغوا کیے گئے اٹھارہ ترک ورکروں کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

آیت اللہ سیستانی کے دفتر کی جانب سے ہفتے کے روز جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ''ہم اغوا کیے گئے افراد کی رہائی اور اس طرح کی مشق کے خاتمے کا مطالبہ کرتے ہیں۔اس سے اسلام کے تشخص کو عمومی طور پر اور اہل تشیع کو خصوصی طور پر نقصان پہنچے گا''۔

واضح رہے کہ چند روز قبل بغداد کے علاقے حبیبیہ سے نامعلوم نقاب پوشوں نے ترکی سے تعلق رکھنے والے اٹھارہ تعمیراتی ورکروں کو اغوا کر لیا تھا۔ابھی تک ان کے اتا پتا کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہوسکا ہے۔یہ ترک شہری بغداد میں ایک تعمیراتی کمپنی کے لیے کام کرتے تھے۔

یادرہے کہ گذشتہ سال سخت گیر جنگجو گروپ داعش نے شمالی شہر موصل میں چھیالیس ترک شہریوں کو اغوا کر لیا تھا لیکن انھیں تین ماہ کے بعد رہا کردیا تھا اور انھیں کوئی نقصان بھی نہیں پہنچایا تھا۔ترک حکومت نے تب ان کی رہائی کے لیے کسی قسم کی سودے بازی سے انکار کیا تھا۔