ترکی کے راستے 'داعشی' جنگجوئوں کی اسمگلنگ کی ویڈیو جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

#شام اور #عراق میں سرگرم شدت پسند تنظیم دولت اسلامی "#داعش" نے پہلے بار #ترکی کے راستے غیرملکی جنگجوئوں کی شام اور عراق کی طرف منتقلی کی ویڈیو جاری کی ہے۔ انٹرنیٹ پر پوسٹ کی گئی ایک فوٹیج میں 'داعش' میں بھرتی ہونے کے بعد ترکی کے ایک ہوائی اڈے پر پہنچنے والے مختلف جنگجوئوں کو دکھایا گیا ہے جنہیں بعد ازاں بہ حفاظت ترکی سے شام یا عراق منتقل کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ماضی میں داعش اور #النصرہ_محاذ کے جنگجوئوں کی ترکی کے راستے شام اور عراق منتقلی کی خبریں آتی رہی ہیں مگر ان تنظیموں کی جانب سے ایسا کوئی ثبوت مہیا نہیں کیا گیا۔ یہ اس نوعیت کی پہلی ویڈیو فوٹیج ہے جس میں داعش میں بھرتی ہونے والے جنگجوئوں کو ترکی کی سرزمین استعمال کرتے ہوئے شام میں داخل ہوتے دکھایا گیا ہے۔ ترکی میں دوسرے ملکوں سے آنے والے جنگجو ہوائی اڈوں سے کلیئرنس لینے کے بعد شام یا عراق کی طرف روانہ ہوتے ہیں۔

"داعش" کی جانب سے مبینہ طور پر جاری کردہ فوٹیج میں بیرون ملک سے آنے والے جنگجوئوں پر بڑے فخر کا بھی اظہار کیا گیا ہے۔ یہ فوٹیج ایک ایسے وقت میں منظر عام پر آئی ہے جب دوسری جانب لاکھوں شامی پناہ گزین اپنا گھر بار چھوڑنے کے بعد سنگین مشکلات سے دوچار ہیں۔ ان کے ملک میں آنے والے غیرملکیوں کو تحفظ حاصل ہے مگر ملک کے اصل مکینوں کو سمندر کی لہروں اور دوسرے ملکوں کی افواج اور پولیس کے مظالم کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

"داعش" کی جانب سے انٹرنیٹ پر پوسٹ کی گئی ایک فوٹیج میں ترکی کے "ھتائی" شہر کے ایک ہوائی اڈے پر اترنے والے جنگجوئوں کو دکھایا گیا ہے۔ یہ شہر شام کی سرحد سے محض چند میل کے فاصلے پر ہے۔ وہاں سے جنگجو کلیرنس لینے کے بعد بہ حفاظت شام میں داخل ہو رہے ہیں۔

داعش کا کہنا ہے کہ تنظیم نے بیرون ملک سے آنے والے اپنے حامیوں کی تصاویر اور فوٹیج کو نہایت راز داری میں تیار کیا ہے تاکہ ترک حکام اور پولیس کو ان کا علم نہ ہوسکے۔ باہر سے آنے والے کئی جنگجو دوسرے ملکوں میں سرگرم جہادی تنظیموں کے اہم رہ نما رہ چکے ہیں۔ فوٹیج میں دکھائے گئے لوگوں میں سے دو کو موریتانوی، چار کو لیبیا، مصر، سعودی عرب اور برطانیہ کے شہری بتایا گیا ہے۔ فوٹیج میں نہ صرف جنگجوئوں کے ترکی سے شام میں داخل ہوتے دکھایا گیا بلکہ رات کی تاریکی میں اسملگروں کی مدد سے ان کی شام کے اندر منتقلی کے لیے اسملگروں کا طریقہ کار بھی بتایا ہے۔

ویڈیو فوٹیج میں کچھ لوگوں کو اپنے بیگ اٹھائے تیزی کے ساتھ اپنے انتظار میں کھڑی کاروں کی طرف بھاگتے دکھایا گیا ہے۔ یہ گاڑیاں ترکی اور شام کی سرحد کے کسی خفیہ مقام پر کھڑی ہوتی ہیں، جن پر داعش اور دوسرے شدت پسند جنگجوں کو سوار کرنے کے بعد ان کی اگلی منازل تک پہنچایا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں