.

خلیجی فنکارہ احلام دین کی دعوت کا کام کریں گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

معروف اماراتی فنکارہ احلام کا کہنا وہ ایک دن فن کی دنیا کو خیرباد کہتے ہوئے دعوت دین کے کام میں مشغول ہو جائیں گی۔ میں اپنی اولاد میں کسی کو فن کی دنیا میں آنے کی اجازت نہیں دوں گی۔

مصر سے نشریات پیش کرنے والے ڈریم چینل کے پروگرام 'العاشرہ مساء' میں سوالوں کا جواب دیتے ہوئے احلام نے بتایا کہ "انہیں ایک مبلغ اسلام نے توبہ کرتے ہوئے دعوت دین کا کام کرنے کی ہدایت کی ہے۔ میرا اس متعبر مبلغ کو یہی کہنا تھا کہ وہ میرے لئے ہدایت کی دعا کریں کہ میں ایک دن دعوت کا کام کرنے لگوں۔ قسم سے میرے دل میں یہ احساس جاں گزیں ہے کہ میں داعیہ بنوں۔ ایسا کرنے کے لئے میں فن کی دنیا کو خیرباد کہہ کر کل وقتی طور پر دعوتی کام کروں گی۔" خاتون فنکارہ نے یہ نہیں بتایا کہ ان کا موجودہ پیشہ جائز ہے یا ناجائز، یا انہیں اس بارے میں تیقن سے معلوم نہیں۔

ٹی وی شو میں احلام کا مزید کہنا تھا کہ ان میں ایک کامیاب داعیہ بننے کے تمام گن موجود ہیں۔ میرے پاس دین کا صحیح فہم، نرمی اور مغالطہ سے بچنے رہنے جیسی صفات موجود ہیں۔ میں جب اپنی سہیلیوں میں بیٹھتی ہوں تو انہیں دینی قصے سناتی ہوں اور ان سے دین کے بارے میں سوال پوچھتی ہوں۔

ایک سوال کے جواب میں خلیجی دنیا کی معروف فنکار کا کہنا تھا کہ اپنے بچوں کے مستقبل سے متعلق میں کوئی رائے ان پر ٹھونسنا نہیں چاہتی، بس انہیں سیدھی راہ اختیار کرنے کی نصیحت کرتی ہوں۔ میں اپنے کسی بچے کو فن کی دنیا میں آنے کی اجازت نہیں دوں گا۔