.

شام :ائیربیس پر لڑائی میں 100 جنگجو اور فوجی ہلاک

فوج روسی فضائیہ کی مدد سے ائیربیس پر داعش کا محاصرہ ختم کرانے میں کامیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے شمالی صوبے حلب میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش کا ایک فوجی ہوائی اڈے پرمحاصرہ ختم کرانے کے لیے اسدی فوج کی کارروائی کے دوران کم سے کم ایک سو فوجی اور جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق نے جمعرات کو ایک بیان میں اطلاع دی ہے کہ اس ہفتے کے دوران حلب میں واقع ائیربیس پر اسدی فوج کے قبضے کے لیے لڑائی میں مرنے والوں میں داعش کے جنگجوؤں کی تعداد زیادہ ہے۔ان کے بعد سرکاری فوج اور اس کے اتحادیوں کی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

شامی فوج داعش کے جنگجوؤں کے ساتھ خونریز لڑائی کے بعد کویرس ائیر بیس کا محاصرہ ختم کرانے اور اس کا دوبارہ کنٹرول حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔30 ستمبر کو روس کی شام میں فوجی مداخلت اور داعش اور دوسرے جنگجو گروپوں کے خلاف فضائی مہم کے آغاز کے بعد بشارالاسد کی وفادار فوج کی یہ ایک اہم کامیابی ہے۔

اسدی فوجی منگل کے روز کویرس ائیربیس میں داخل ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے۔اس کا پہلے باغی جنگجوؤں اور پھر داعش نے گذشتہ ایک سال سے محاصرہ کررکھا تھا لیکن وہ اس کا مکمل قبضہ حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکے تھے اور وہاں موجود فوجی ان کی مزاحمت کرتے رہے تھے۔

شامی فوج نے روسی طیاروں کے داعش اور دوسرے باغی گروپوں کے خلاف فضائی حملوں کے آغاز کے بعد سے متعدد مرتبہ باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں کی جانب پیش قدمی کی کوشش کی ہے لیکن اس کو کوئی نمایاں کامیابی نہیں مل سکی ہے اور باغی جنگجو اس کی شدید مزاحمت کررہے ہیں بلکہ انھوں نے صوبے حماہ میں پیش قدمی کرتے ہوئے بعض علاقوں پر قبضہ کر لیا ہے۔البتہ روسی فضائیہ کی مدد آنے کے بعد سے شامی فوج کا مورال ضرور بلند ہوا ہے۔