.

بغداد: جنازے میں خودکش بم دھماکا ،19 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے دارالحکومت بغداد میں ایک مسجد میں اہل تشیع کے ایک جنازے میں خودکش بم دھماکا ہے جس کے نتیجے میں انیس افراد ہلاک اور تینتیس زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی حکام کے مطابق حملہ آور بمبار نے بغداد کے جنوبی علاقے الامل میں واقع العشرہ المبشرین مسجد میں خود کو دھماکے سے اڑایا ہے۔اس وقت داعش کے خلاف جنگ میں مارے گئے شیعہ ملیشیا الحشد الشعبی کے ایک جنگجو کی نماز جنازہ ادا کی جارہی تھی۔

فوری طور پر کسی گروپ نے اس خودکش بم حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے لیکن عراق میں داعش کے علاوہ دوسرے جنگجو گروپ اہلِ تشیع پراس طرح کے خود کش حملے کرتے رہتے ہیں۔

الحشد الشعبی کے یونٹ ایران کی حمایت یافتہ شیعہ ملیشیاؤں پر مشتمل ہیں اور وہ عراق کے مغربی اور شمال مغربی صوبوں میں سرکاری فوج کے شانہ بشانہ داعش کے خلاف جنگ میں شریک ہیں۔گذشتہ مہینوں کے دوران ان کی مدد سے ہی عراقی فوج شمالی شہر تکریت اور بعض دوسرے علاقوں پر دوبارہ قبضہ کرنے میں کامیاب ہوئی تھی۔