.

لیبیا:داعش اہل سرت کے لیے وبال جان بن گئی!

تصوف سے توبہ کریں ورنہ کڑی سز ہو گی: داعش کی وارننگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی فوج نے کہا ہے کہ انہوں نے بنغازی شہر کی ابوعطنی کالونی اور ملٹری فضائی اڈے کو دولت اسلامی"داعش" کہلوانے والی دہشت گرد تنظیم سے گھمسان کی جنگ کے بعد چھڑا لیا مگر داعش کی جانب سے سرت شہر کی آبادی کو تصوف سے توبہ کرنے کا حکم دیتے ہوئے حکم عدولی پر کڑی سزا دینے کی وارننگ دی ہے۔

العربیہ ٹی وی کو اپنے ذریعے سے اطلاع ملی ہے کہ داعشی جنگجوئوں کی جانب سے سرت شہر کے آئمہ مساجد کو ایک سرکلر جاری کیا گیا جس میں ان سے کہا گیا ہے کہ وہ صوفیا کی ایک جماعت سے تعلق رکھنے والےلوگوں کو توبہ کرائیں کیونکہ یہ لوگ 'کفر' کا ارتکاب کر رہے ہیں۔ اگر یہ لوگ توبہ نہیں کرتے ہیں تو انہیں سخت ترین سزا بھگتنا ہو گی۔

مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ داعش کے دھمکی آمیز بیان کے بعد اہل سرت خوف کا شکار ہیں اور انہوں نے عالمی برادری سے داعش کی جانب سے لاحق خطرات ختم کرنے میں مدد کی درخواست کی ہے۔

سرت کے ایک حصے پر"فجر لیبیا" نامی ایک عسکری گروپ کا قبضہ تھا جہاں داعش اور فجر لیبیا کے درمیان گھمسان کی لڑائی ہوئی۔ بعد ازاں داعش نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے سرت کا مکمل کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

ادھر العربیہ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ لیبیا کی پارلیمنٹ ملک میں متحارب دھڑوں میں امن بات چیت کے حوالے سے وفد کی تشکیل میں ناکام رہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سوموار کے روز ہونے والے پارلیمنٹ کے اجلاس میں ایوان میں موجود ارکان کی اکثریت نے قومی حکومت کی تشکیل سے متعلق اقوام متحدہ کے مندوب کے ترمیمی مسودے کو مسترد کر دیا تھا۔