.

پیرس دہشت گرد سے مشابہہ مراکشی دوشیزہ خوف کا شکار!

نبیلہ خوف کے باعث گھرمیں بند ہو کر رہ گئی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مشاہیر کے ہم شکل ہونے سے گمنام لوگ بھی شہرت حاصل کرتے ہیں مگر گاہے یہ شہرت عزت کے بجائے خوف کا بھی موجب بن جاتی ہے۔ مراکش کی ایک دوشیزہ ان دنوں ایسی ہی ایک پریشانی کا شکار ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مراکشی نبیلہ بکاثہ نے امریکی ٹی وی "سی این این" سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ دونوں فرانس کے صدر مقام پیرس کے نواحی علاقے"سینٹ ڈینس" میں پولیس کے آپریشن کے دوران خودکش بم دھماکے میں ہلاک ہونے والی خاتون کی شکل اس سے ملتی ہے۔ مراکشی اخبارات مشتبہ خودکش بمبار خاتون کی تصاویر سے بھرے پڑے ہیں۔ خودکش حملہ آور کی ہم شکل ہونے کی وجہ سے مجھے خوف لاحق ہے۔ اسی خوف کے باعث میں نے گھر سے باہر قدم رکھنا چھوڑ دیا ہے مبادہ کوئی شخص مجھے ہی دہشت گرد سمجھ کر انتقام کا نشانہ نہ بنا ڈالے۔

ایک سوال کے جواب میں مراکشی دوشیزہ کا کہنا تھا کہ ماضی میں اس کے فرانسیسی خودکش بمبارہ حسناء بو لحسن کے ساتھ بھی دوستانہ تعلقات رہے ہیں مگر دونوں میں بہت پہلے اختلافات پیدا ہوئے اور رابطہ منطقع ہو گیا تھا۔ بکاثہ نے بتایا کہ اس کی شکل حسناء بولحسن کے ساتھ کافی حد تک مشابہت رکھتی ہے۔ جو یہ جانتے ہیں ہم دونوں ایک دوسرے کے قریب رہ چکی ہیں وہ مجھے انتقام کا نشانہ بنا سکتے ہیں۔

نبیلہ بکاثہ کا کہنا ہے کہ اخبارات میں شائع ہونے والی بولحسن کی تصاویر سے میری شکل ملتی ہے مگر میرا اس کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے۔ اگر کسی کو تصاویر کی وجہ سے مجھ پر شبہ ہوتا ہے تو وہ غلط ہو گا۔

بکاثہ کی اس پریشانی میں اس کے اہل خانہ بھی شریک ہیں۔ اس کی والدہ بھی بیٹی کی وجہ سے صدمے کا شکار ہیں حتیٰ کہ بعض اقارب نے نبیلہ بکاثہ سے بات چیت بھی ترک کر دی ہے۔

ہم شکل ہونے کی وجہ سے بکاثہ کی زندگی یک دم بدل گئی ہے۔ وہ ملازمت کے لیے گھر سے باہر نہیں جا سکتی۔ فرانس کا سفر تو ان ناممکن ہے۔