سعودی عرب میں اخوانی نظریات کی پرچارک کتابوں پر پابندی

قرضاوی سمیت حسن البنا، سید قطب، مودودی کی کتب لائبریوں سے ہٹانے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی وزارت تعلیم نے اپنے زیر انتظام تمام تعلیمی اداروں کو نوٹس جاری کیا جس میں انہیں اخوان المسلمون کےبانی حسن البناء، سید قطب اور قطر میں مقیم مصری عالم دین علامہ یوسف القرضاوی سمیت کئی دوسرے مصنفین کی 80 کتب ضبط کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

'العربیہ' ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اعلی ٰ تعلیم کی وزارت کی جانب سے اپنے ماتحت تعلیمی اداروں اور جامعات کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ اپنے ہاں قائم کردہ کتب خانوں میں موجود متذکرہ مصنفین کی تمام کتب دو ہفتوں کے کے اندر ہٹا کر متعلقہ حکام کے حوالے کر دیں۔

جن کتاب کی ضبطی کا حکم دیا گیا ہے ان میں حسن البناء کی "اللہ فی العقیدہ اسلامیہ"، "الوصایا العشر"، یوسف القرضاوی کی "الحلال والحرام"، "شبہات حول الاسلام" اور "مستقبل لھذا الدین" اور سید قطب کی "معالم فی الطریق" بھی شامل ہیں۔

ان کے علاوہ برصغیر کے ممتاز عالم دین مولانا سید ابو الاعلیٰ مودودی، مالک بن نبی، عبدالقادر عودہ، مصطفی السباعی، انور الجندی اور حسن الترابی سمیت کئی دوسرے مصنفین کی بھی بعض کتب پرپابندی عاید کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں