.

شامی حزب اختلاف کا اہم اجلاس سعودی عرب میں شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی صدر بشار الاسد کی حکومت کے ساتھ متوقع مذاکرات سے پہلے شامی اپوزیشن جماعتوں کا اہم اجلاس بدھ کے روز سعودی دارلحکومت ریاض میں شروع ہو گیا۔ اجلاس کا مقصد اپوزیشن کو بشار الاسد حکومت سے مذاکرات سے قبل ایک نقطہ پر متحد کرنا ہے۔

سعودی خبر رساں ادارے 'ایس پی اے' کے مطابق اجلاس میں شام کے اندر اور باہر حکومت مخالف جماعتوں کے نمائندوں کی بڑی تعداد شریک ہے۔

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے شرکاء کو بند کمرے میں ہونے والے اجلاس کے دوران خوش آمدید کہا اور کامیاب مذاکرات کی امید ظاہر کی۔ افتتاحی خطاب کے بعد سعودی وزیر خارجہ اجلاس سے چلے گئے جس کے بعد شامی جماعتوں نے بات چیت کا آغاز کیا۔ یہ اجلاس جمعرات تک جاری رہنے کی توقع ہے۔

یاد رہے کہ 2011ء سے شامی جنگ کے آغاز کے بعد یہ پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ شام کے مختلف سیاسی اور عسکری گروپوں کے نمائندے ایسا اجلاس منعقد کر رہے ہیں جس میں تمام اسٹیک ہولڈر ایک متحدہ موقف اپنانے کی کوشش کر رہے ہیں تاکہ اسے بشار الاسد کے ساتھ مذاکرات میں پوری قوت کے ساتھ پیش کیا جائے۔