.

بشار مذاکرات سے اقتدار چھوڑیں یا طاقت استعمال کی جائے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے کہا ہے کہ ریاض کانفرنس میں طے پانے والے متوقع اصول کسی نافذہ طاقت کے بغیر مؤثر نہیں ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ کانفرنس کا مقصد شامی اپوزیشن کو ایک متحدہ موقف کے گرد جمع کرنا ہے تاکہ بعض ممالک حزب اختلاف کی صفوں میں انتشار نہ پیدا کر سکیں۔

خلیجی ملکوں کے سربراہی اجلاس کے بعد نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عادل الجبیر نے واضح کیا کہ بشار الاسد کے پاس دو راستے ہیں۔ پہلا راستہ مذاکرات کے ذریعے اقتدار سے سبکدوشی اور دوسرا راستہ طاقت کے زور پر اقتدار سے علاحدگی کا ہے۔